Oops! It appears that you have disabled your Javascript. In order for you to see this page as it is meant to appear, we ask that you please re-enable your Javascript!

کابل سے ہرات تک بہتا لہو | حیدر جاوید سید

مئی کے آخری ہفتے کے دوران افغان دارالحکومت کابل میں آگ و خون کا جو کھیل شروع ہوا تھا وہ

Read more

کابل سے لندن اور کوئٹہ تک ، دہشت گرد مسلمان ہی کیوں ہوتے ہیں؟ | حیدر جاوید سید

پچھلے دو ہفتے کابل کے شہریوں کے لئے قیامت سے کم نہیں تھے۔ ساعت بھر کے لئے رک کر ایک

Read more

“کابل کے قصائی” کی دبنگ انٹری کے ساتھ واپسی | انور عباس انور

گزشتہ دنوں “کابل کے قصائی” کے نام سے معروف گلبدین حکمت یار نے پورے جاہ جلال کے ساتھ کابل کے

Read more
%d bloggers like this: