Oops! It appears that you have disabled your Javascript. In order for you to see this page as it is meant to appear, we ask that you please re-enable your Javascript!

بارود کے بدلے ہاتھوں میں آ جائے کتاب تو اچھا ہو | ام رباب

ہمارے معاشرے میں خوشیوں کو مذہب کا ڈھاٹا باندھ کر ان خوشیوں کی سانس تک ایسے روک دی گئی ہے

Read more

الفاظ اب بارود بن کر برستے ہیں – شاہسوار حسین

ایم ایس کے دفتر کی گھنٹی بجی تو خدا بخش چائے کا کپ وہیں چهوڑ کر دفتر کی طرف تیزی

Read more
%d bloggers like this: