Oops! It appears that you have disabled your Javascript. In order for you to see this page as it is meant to appear, we ask that you please re-enable your Javascript!

کراچی والوں کی خصوصیت

Print Friendly, PDF & Email

میں پاکستان کے متعدد شہروں یہاں تک کہ بعض اسلامی ممالک میں رمضان المبارک کے بابرکت ایام گزار چکا ہوں، لیکن جو خصوصیت کراچی والوں کی ہے وہ کسی کی نہیں۔ افطار کے قریب کراچی کی تقریبا تمام بارونق سڑکوں اور چوراہوں میں افطار کے دسترخوان یا ٹیبل سج جاتے ہیں جس میں ہر عام و خاص کو افطار کروائی جاتی ہے۔

افطار کے خاص ٹائم سڑکوں کے کنارے عام شہری کھجوریں، پانی کی چھوٹی بوتلیں، افطاری کے لوازمات یہاں تک کہ کھانے کے ڈبے لے کر کھڑے ہوتے ہیں تاکہ بسوں، گاڑیوں، موٹر سائیکلوں اور رکشوں کے مسافروں کو افطار کرانے کی سعادت حاصل کر سکیں۔ بعض جگہوں پر فیملیز تھال لئے گاڑیوں میں کھجوریں اور افطاری بانٹ رہی ہوتی ہیں۔ ان تمام باتوں کا کریڈٹ اہالیان کراچی کو جاتا ہے۔ یاد رہے کہ مساجد میں ہونے والی افطاری اس کے علاوہ ہے۔

جبکہ پاکستان کے دیگر شہروں میں افطار کے وقت ہو کا عالم ہوتا ہے، بعض شہروں میں کبھی افطار سے قبل جانا پڑے تو کراچی کی عادت میں منتظر رہتا ہوں کہ کہیں کوئی کراچی جیسا منظر نظر آئے لیکن شدید مایوسی ہوتی ہے۔ اس وقت یا تو ہو کا عالم ہوتا ہے یا نفسا نفسی، ہر کسی کو افطار کے وقت گھر پہنچنے کی جلدی ہوتی ہے جبکہ کراچی میں افطار کے ٹائم پر بھی رونق ہوتی ہے کیونکہ شہریوں کو اطمینان ہوتا ہے کہ افطار کے وقت کوئی بھوکا نہیں رہے گا۔

یہ بھی پڑھئے:   جی ٹی روڈ تے بریکاں وجیاں۔۔۔ | مجتبی شیرازی

یہی وجہ ہے کہ امور خیریہ میں کراچی والے پیش پیش ہیں۔ ایدھی، چھیپا، سیلانی و عالمگیر ٹرسٹ وغیرہ اسی شہر سے ہیں۔ اللہ تعالی ان سب کی توفیقات میں اضافہ کرے اور ان کی کوششوں کا اجر عطا کرے۔

میری ان باتوں کا مقصد دیگر شہروں میں رہنے والوں کی دلآزاری نہیں بلکہ اہالیان کراچی کی ان کاوشوں کو خراج تحسین پہنچانا ہے۔ اگر ممکن ہو تو دیگر شہروں میں رہنے والے بھی اس سلسلے کو شروع کر سکتے ہیں۔

Views All Time
Views All Time
112
Views Today
Views Today
4

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: