Oops! It appears that you have disabled your Javascript. In order for you to see this page as it is meant to appear, we ask that you please re-enable your Javascript!

قسمت – انڈین پنجابی فلم

Print Friendly, PDF & Email

سارے منڈے(لڑکے) ایک جیسے کمینے نہیں ہوتے بلکہ ان کی بھی دو کٹیگریز ہیں۔ ایک وہ جو ہر لڑکی کو ایک ہی نظر سے دیکھتے ہیں۔ ہر لڑکی پر ٹرائی مارنا، اگر ہاں کر دی تو اس پر رک جانا اور اگر نا کر دی تو دوسری پر ٹرائی مارنا۔ پانچ ہوں یا سات یا جتنی بھی ہوں ان کے لیے کم ہی پڑتی ہیں۔ دوسری کٹیگری کے وہ منڈے جو بظاہر کمینے نظر آتے ہیں مگر اندر سے شریف ہوتے ہیں۔ لڑکیوں کو منڈوں کی ایک ہی نظر اور ایک ہی ٹچ سے پتہ چل جاتا ہے کہ اس منڈے کی نیت کیا ہے۔ یہ کس حد تک جا سکتا ہے، یہ کس حد تک سوچ سکتا ہے۔ یہ کمر میں ہاتھ ڈالے، گلے سے لگاۓ مگر پھر بھی اس میں کمینہ پن نہیں ہوتا۔ یہ ٹائم پاس نہیں ہوتے، ان کو اس لڑکی میں اگر کوئی انٹرسٹ ہوتا ہے تو وہ صرف سچے پیار کی شکل میں ہوتا ہے۔ یہ اس لڑکی کو دل و جان سے پیار کرتے ہیں۔ اس پر جان تک قربان کر دیتے ہیں، اپنی زندگی اس کے لیے وقف کر دیتے ہیں۔

جنا سوچ نہ سکے توں، انا پیار کرنے آں
تیری گل ہور اے سجنا، اساں تے تیرے پیراں ورگے آں

جب سچا پیار ہوتا ہے تب بھوک کم لگتی ہے، نیند بھی کم آتی ہے اور ہر چیز نئی نئی لگتی ہے۔ کچھ نہ کچھ نیا ہونےلگتا ہے۔ دل گانے لگتا ہے کہ
تیری اکھیاں وچ نور کنا سارا گلاں وچ سکوں سی سجنا
مینوں لگیا اللہ نے واز ماری بلایا مینوں توں سی سجنا

مگر لو سٹوری میں زمانہ درمیان میں نہ آئے تو کہانی مکمل نہیں ہوتی۔ لڑکی کے باپ کا انکار اور لڑکی کی شادی کہیں اور، منڈا شکستہ دل کے ساتھ واپس اپنے گاؤںجے میں نئیں تیرے کول تے فیر کون ہووے گا؟ روح میری تڑپے گی جانی دل وی روئے گاآخری بار دونوں ریلوے سٹیشن پر ملتے ہیں۔ دونوں اپنے ریلیشن کے دو حصے کر لیتے ہیں۔ لڑکی دوستی پلیٹ فارم پر اپنے پاس رکھ لیتی ہے اور منڈا اپنا پیار لے کر گاؤں واپس چلا جاتا ہے۔

یہ بھی پڑھئے:   بخدا آج ہدایت کے ستون منہدم ہوگئے

اس قصے کو دو سال گزر جاتے ہیں کہ ایک دن منڈے کے رشتے کے سلسلے میں ایک لڑکی کے گھر جانا ہوتا ہے جہاں اس کے محبوب کے باپ سے ملاقات ہو جاتی ہے۔ پتہ چلتا ہے کہ لڑکی کی دونوں کڈنیز پچھلے ایک سال سے خراب ہیں اور وہ ڈائیلسیز پر زندہ ہے، کیسے زندہ ہے یہ ڈاکٹر بھی حیران ہیں۔ کہ کون سا معجزہ اسے زندہ رکھے ہوے ہے۔ یہ معجزہ ہوتا ہے اپنے محبوب سے ملنے کی تمنا۔
مینوں عادت پہ گئی تیری جانی وے ایس طرح
مچلی نوں پانی دی لوڑ اے جس طرح

کہانی کا آخر کیا ہے؟ کیا منڈا اپنے بھائی کی سالی سے شادی کر لیتا ہے یا پھر؟ بہت کم فلموں کا اختتام اچھا فلمایا جاتا ہے۔ یہ فلم ان چند فلموں میں سے ایک ہے۔
تیری یاد مینوں تڑپاوے مینوں تے چین نہ آوے
میرے جسم چوں میرے جانی تیرے جسم دی خوشبو آوے
میں چاہے جاگاں، میں چاہے سوواں تنگ کردے نیں خیال تیرے

ساری لو سٹوریز پر مبنی فلمیں ایک جیسی ہوتی ہیں مگر کچھ خاص ہوتی ہیں۔ “قسمت” ان میں سے ایک ہے۔ جس کو دیکھ کر محبت کرنے کو دل کرے گا اور جس نے محبت کی ہے اسے اپنی محبت سے اور زیادہ عشق ہو جائے گا۔ جو ناکام رہا اس کی انکھوں کے لیے کچھ آنسو جو اسے اپنی ناکام محبت کی یاد دلایں گے۔ بہت دنوں کے بعد ایک بہترین خالص لو سٹوری پر مبنی فلم دیکھی، جس میں سچا پیار ہے جس میں Lust نہیں ہے۔ جس میں جسم سے پیار نہیں ہے۔ بس روح کے ساتھ پیار دیکھایا گیا ہے۔ ایمی ورک کے گائے ہوئے بہترین رومینٹک لو سانگ۔بہت دنوں بعد بہترین میلوڈیس گانے سننے کو ملے۔ اس فلم نے شباب کیرانوی بابرہ شریف اور غلام محیی الدین کی فلم “میرا نام ہے محبت “ کی یاد تازہ کر دی۔ IMDb rating 9.1/10 ہے

یہ بھی پڑھئے:   مادھو لعل ؒ کے شہر سے سندھ کنارے تک(2) -قمر عباس اعوان

جگدیپ سدھو کی کہانی اور ڈائریکشن میں بنی ہوئی فلم جس کا ہیرو ایمی ورک اور ہیروین سرگن مہتا ہیں۔جس میں رومینس کامیڈی کے ساتھ ساتھ ٹریجدی ہے۔ 2018 کی بہترین سوفٹ فلم جس نے تیس کروڑ کمائے۔ کمائی کے حساب سے یہ انڈین پنجابی فلم انڈسٹری کی چھٹی بڑی فلم ہے، جبکہ 2018 کی دوسری بڑی فلم۔ عجیب بات کہ سدھو نے یہ فلم بالی وڈ کے لیے لکھی تھی مگر یہ کہانی ادھر سے ریجکٹ ہو گئی۔ پھر سدھو کو پنجابی فلم انڈسٹری سے فلم بنانے کی آفر ہوئی۔ اور اس طرح ایک شاہکار وجود میں آیا۔ 140 منٹس کی ٹوٹل رن ہے۔ پاکستان میں ابھی تک کسی کو بھی انڈین پنجابی فلم پاکستان میں ریلیز کرنے کا خیال نہیں آیا۔ لیکن جس دن ایک بھی فلم ریلیز ہو گئی تو “پاکستانی پنجاب” پاکستانی فلم انڈسٹری کے ہاتھوں سے گیا۔

Views All Time
Views All Time
1176
Views Today
Views Today
5

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: