کیا عورت منحوس ہے؟

Print Friendly, PDF & Email

zariمفتی صاحب نے اپنے فتوے میں فرمایا کہ عورت کی حکمرانی نحوست کی علامت ہے ۔۔۔ارے واہ مفتی صاحب کیا کہنے آپ کی سوچ اور اور علم کے ۔ذرا اپنے گھر میں پھرتی اس عورت کی طرف دیکھیے جو آپ کے بچوں کی ماں ہے اور آپ کا پورا گھر سنبھالے ہوئے ہے غور فرمایئے اس بہن کی طرف جو ہر دم بھائی کی خیر مانگتی ہے اور توجہ ہو جائے صحن میں کھیلتی ننھی پری کی جانب بھی جو آپ کے گھر کی رونق ہے ۔کیا آپ کے گھر نحوست ہے ان کے وجود سے تو پھر فتوی دیتے ہوئے بھی سوچ لیتے کہ عورت منحوس کیسے ہو سکتی ہے۔
وجود زن سے ہےتصویر کائنات میں رنگ۔۔
بالکل درست کہا ہے جس نے بھی کہا ہے ذرا ایک لمحے کو سوچیئے کہ مالک کائنات نے زمین بنانے سے پہلے عورت کو کیوں تخلیق کیا ؟ آخر کوئی تو وجہ تھی نا ۔۔آگے ہم عام زندگی میں بھی دیکھیں تو ایک گھر میں اگر دس آدمی بھی ہوں اور عورت نہ ہو تو وہ گھر بکھرا ہی نظر آئے گا ۔بیٹیوں کے دم سے تو پورے گھر میں رونق ہوتی ہے اور جب بات کی جائے آج کی عورت کی تو وہ گھر اور گھر کے باہر کامیابی کے جھنڈے گاڑتی نظر آتی ہے ۔آپ کے گھر بازار اور تمام اداروں کی رونق عورت ہی کے دم سے ہے ۔جتنے بھی کاروبار ہیں اور جو بھی دوکانیں ہیں وہ تقریباََ عورتوں کے دم قدم ہی سے چل رہی ہیں۔
عورت کی حکمرانی نحوست کیسے ہو سکتی ہے جبکہ ہمارے اپنے ملک میں محترمہ بینظیر بھٹو دو بار حکومت کر چکی ہیں اگر وہ دور حکومت منحوس تھا تو مردوں کی حکومت نے کون سے چار چاند لگائے ہیں اس ملک کو کون سا اور کب عوام کا بھلا کیا ہے۔
ذرا سوچیئے آپ کی زندگی سے اگر عورت کا کردار ختم کر دیا جاتا ہے تو کیسی ہو گی وہ زندگی۔
عورتیں بھلا کیسے منحوس ہو سکتی ہیں جو ماں کے روپ میں قدموں میں جنت لیے پھرتی ہیں بہنیں ہوں تو بھائیوں کا مان ہیں بیٹی ہے تو باپ کے لیے سراپا رحمت ہے۔
بجائے اس کے کہ عورتوں کو فتووں کی مار ماریں انہیں انسان سمجھیے ۔ان کو جینے کا اتنا ہی حق ہے جتنا کہ آپ کو خود ہے۔زندگی پر ان کا بھی اتنا ہی حق ہے جتنا کہ آپ کا تو گزارش یہ ہے کہ انہیں بھی زندگی ایک ہی بار ملی ہے اور اپ کو بھی ایک ہی بار۔
تو جناب ہمیں بھی
جینے دو 
ہنسنے دو 
پڑھنے دو 
آگے بڑھنے دو 
اللہ پاک کا فرمان ہے 
اور ہم نے انسان کو بہترین طور پہ تخلیق کیا۔
تو سنیے خدا کی اس مخلوق کو اپنے نام نہاد فتوؤں کی بھینٹ مت چڑھا یئے
اگر الله پاک نے آپ کو علم اور توفیق سے نوازا ہے تو اس کا مثبت استعمال کیجئے۔
اگر کسی کی زندگی آسان نہیں کر سکتے تو مشکل بھی مت بنایئے۔
ویسے آپ کے کہنے سے بہت زیادہ فرق نہیں پڑے گا بس زندگی تھوڑی مشکل ہو جائے گی پر ہم پھر بھی جینا جانتی ہیں۔۔اور ہم جی کے دکھائیں گے۔
کیا عورت منحوس ہے؟

Views All Time
Views All Time
808
Views Today
Views Today
2
mm

ڈاکٹر زری اشرف

ڈاکٹر زری اشرف ایک ڈاکٹر ہونے کے ساتھ ساتھ سوشل ورکر بھی ہیں۔ اور اس کے علاوہ مطالعہ کی بیحد شوقین۔ قلم کار کے شروع ہونے پر مطالعہ کے ساتھ ساتھ لکھنا بھی شروع کر دیا ہے۔

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: