Skip to Content

Qalamkar | قلم کار

جہالت، ظلم اور ناانصافی کے خلاف برسرپیکار

اتنا کرو کہ صدف مہیا کرو ہمیں – زری اشرف

اتنا کرو کہ صدف مہیا کرو ہمیں – زری اشرف

ایک قلم وہ تھا جو بچپن میں تھاما تو تختی پر لکھنے سے لیکر ڈاکٹری نسخے تک بات پہنچی ۔۔عزت اور روزگار دونوں اسی قلم کی بدولت ملے۔زندگی بہت پرسکون اور مطمئن گزر رہی تھی پر دماغ میں کچھ عجیب باتیں ہوتیں۔ سوچیں بس سوچنے کی حد تک تھیں۔بہت سی باتوں پر دل کڑھتا تو سمجھ نہیں آتی تھی کہ کیا کیا جائے۔بہت سے لکھاریوں کے ساتھ ساتھ جس کی تحریروں نے بہت متاثر کیا ان میں رامش فاطمہ کا نام سرفہرست ہے۔
کبھی نہ لکھ پاتی اگر قمرعباس اعوان میرا بہت پیارا اور شدید کنوارا دوست میری زندگی میں نہ آتا۔
قلم کار کی سائٹ اور نام سوچنے اور فائنل کرنے سے لے کر آج تک اس کے ساتھ ہوں۔اسے شروع کرنے میں قمر عباس اعوان رضوان گورمانی، ذیشان حیدر نقوی اور دیگر دوستوں کا بہت ساتھ رہا۔ ۔۔قلم کار کی کامیابی کا سہرا قمر عباس کے نام جاتا ہے۔حیدر جاوید صاحب کی رہنمائی نے اسے چار چاند لگائے۔بہت سے دوست آئے اور گئے۔ قلم کار نے ہر لکھنے والے کو جگہ بھی دی اور عزت بھی۔آج ایک سال کا قلم کار میرے سامنے ایک تنومند نوجوان کی صورت میں موجود ہے۔
مجھے تو لکھنا نہیں آتا تھا پر قمر اور قلم کار نے سکھا دیا ۔وہ باتیں اور حالات حاضرہ جو صرف دماغ میں ہلچل مچاتے تھے اب قلم کار کی زینت بنتے ہیں۔مجھے بہت کچھ نئے لکھنے والوں نے بھی سکھایا ۔
نیٹ خراب ہے یا قمر کے گھر کی شفٹنگ کا مسئلہ ہے۔آندھی ہے یا طوفان پر قلم کار کا سفر جاری رہا۔بہت سے دوست آئے اور گئے پر میری قلم کار سے دوستی گہری ہوتی گئی۔
اتنا کرو کہ صدف مہیا کرو ہمیں
بنیں گے کیسےیہ گوہر یہ ہم پہ چھوڑ دو
میری دعا بھی ہے اور خواہش بھی کہ قلمکار بہت ترقی کرے۔
تمام قلم کاروں کو قلم کار کی سالگرہ مبارک ہو۔
قلم کار ۔۔ہماری پہچان

mm
ڈاکٹر زری اشرف ایک ڈاکٹر ہونے کے ساتھ ساتھ سوشل ورکر بھی ہیں۔ اور اس کے علاوہ مطالعہ کی بیحد شوقین۔ قلم کار کے شروع ہونے پر مطالعہ کے ساتھ ساتھ لکھنا بھی شروع کر دیا ہے۔
مرتبہ پڑھا گیا
444مرتبہ پڑھا گیا
مرتبہ آج پڑھا گیا
2مرتبہ آج پڑھا گیا
Previous
Next

Leave a Reply

%d bloggers like this: