Skip to Content

Qalamkar | قلم کار

جہالت، ظلم اور ناانصافی کے خلاف برسرپیکار

مقاصد کا بروقت تعین کریں | زہرا تنویر

by اگست 17, 2017 حاشیے
مقاصد کا بروقت تعین کریں | زہرا تنویر

مقصد کوئی بھی ہو، کامیابی تب ہی حاصل ہوتی ہے جب مقصد کا ارادہ کرنے والے کا خلوص و نیت نیک ہو۔ آپ کا مقصد جتنا اعلی اور شفاف ہو گا منزل اتنی ہی قریب ہوتی جائے گی۔ انسان کو مقصد کی تکمیل کے لیے ایک واضح اور وسیع سوچ کا ضرور حامل ہونا چاہیئے کیونکہ روشن سوچیں ہی عمدہ اور کامیابی سے ہمکنار ہوتی ہیں۔

ہم اپنے اردگرد نگاہ دوڑائیں تو ہمیں بہت سے ایسے لوگ دکھائی دیں گے جو ہماری توجہ کے طالب اور منتظر ہوتے ہیں لیکن ہم ان لوگوں کو وہ توجہ اور وقت دینے سے قاصر ہوتے ہیں کیونکہ آج کے جدید اور مادی دور میں ہمارے اپنے اتنے مسائل ہوتے ہیں کی کسی دوسرے کا مسئلہ حل کیا کریں گے اس کو سننے اور جاننے کے لیے بھی وقت نہیں دے پاتے۔ لیکن ضروری نہیں کہ سب لوگ ایک جیسے ہی ہوں، کچھ لوگوں کے دل احساس کے جذبے سے لبریز ہوتے ہیں۔ وہ اپنی زندگی بہتر بنانے کے ساتھ ساتھ دوسروں کی فلاح کے لیے بھی کام کرتے ہیں۔ ایسے لوگ اپنی زندگی کے مقاصد کا تعین کرتے وقت انسانیت کے جذبے کو مدنظر رکھتے ہیں۔ معاشرے کی تعمیر نو میں ایسے افراد کا کردار بہت اہمیت کا حامل ہوتا ہے۔ ان افراد کے مقصد میں انسانی ہمدردی کا جذبہ کارفرما ہوتا ہے جو دوسروں کی زندگی میں بہتری لانے کے ساتھ ساتھ ان کے لیے بھی باعث سکون کا سبب بنتا ہے۔

اس ضمن میں اگر ہم اپنے اردگرد نگاہ دوڑائیں تو بہت سی تنظیمیں معاشرے کی فلاح و بہبود کے لیے کام کر رہی ہیں۔ جب تک معاشرے میں موجود مسائل کا کوئی بہتر سدباب نہیں کیا جائے گا تو ملک ترقی کی راہ پر کیسے گامزن ہو گا۔ اس لیے یہ تنظیمیں چھوٹے بڑے پیمانے پر اپنی خدمات سرانجام دے رہی ہیں۔ عموما ان تنظیموں کے اولین مقاصد میں بچوں میں شرح تعلیم کا تناسب بڑھانا، ضرورت مندوں کی مدد کرنا، خواتین کے مسائل حل کرنا اور گھریلو سطح پر خواتین کو روزگار کے مواقع فراہم کرنا شامل ہوتے ہیں۔

ان میں سے کچھ تنظیمیں لوگوں میں شعور اجاگر کرنے کے لیے مخلتف جگہوں پر آگاہی مہم بھی چلاتی ہیں تاکہ لوگوں کو اپنے مسائل اور ان کے حل کے متعلق آگاہی ہو کہ کس طرح کب اور کیسے اپنے حقوق کے لیے آواز اٹھائی جا سکتی ہے۔ جب کہ دوسری جانب ایسی تنظیمیں ہیں جو عملی طور پر ان معاشرتی مسائل کو حل کرنے میں کوشاں ہیں۔ مقاصد دونوں کے ہی عمدہ اور اچھے ہوتے ہیں لیکن کسی بھی کام اور مقصد میں کامیابی کے لیے افراد کے باہمی تعاون و اشتراک کی ضرورت ہوتی ہے۔ اس لیے ہمیں چاہیئے کہ ان افراد کے ساتھ قدم ملائیں اور معاشرے کے چھوٹے چھوٹے مسائل کو اپنی مدد آپ کے تحت حل کریں۔ اس طرح سے مسائل میں بھی یقینی کمی واقع ہو گی اور ترقی کی راہیں بھی ہموار ہو گی۔ بہتر ہے کہ ہم سب اپنے مقاصد کا تعین کریں اور ان پر کام کریں کیونکہ یہی وقت کی ضرورت ہے۔ جب تک آپ خود اپنے لیے اور دوسروں کے لیے کچھ اچھا نہیں کریں گے، مسائل وہیں کے وہیں رہیں گے۔

Views All Time
Views All Time
232
Views Today
Views Today
1
Previous
Next

جواب دیجئے

%d bloggers like this: