Skip to Content

Qalamkar | قلم کار

جہالت، ظلم اور ناانصافی کے خلاف برسرپیکار

استاد کی تعریف | وقاص اعوان

by اکتوبر 11, 2017 حاشیے
استاد کی تعریف | وقاص اعوان

کسی بھی انسان کی کامیابی کے پیچھے اچھے استاد کی بہترین تربیت کار فرما ہوتی ہے۔ خوش قسمت ہوتے ہیں وہ لوگ جن کی زندگی میں اچھے استاد میسر آ جاتے ہیں۔ ایک معمولی سے نوخیز بچے سے لے کر ایک کامیاب فرد تک سارا سفر اساتذہ کا مرہون منت ہے۔ وہ ایک طالب علم میں جس طرح کا رنگ بھرنا چاہیں بھر سکتے ہیں۔ استاد قوموں کی تعمیر میں بڑا اہم کردار ادا کرتے ہیں۔ اچھے لوگوں کی وجہ سے اچھا معاشرہ تشکیل پاتا ہے اور اچھے معاشرے سے ایک بہترین قوم تیار کی جا سکتی ہے۔ اساتذہ اپنے آج کو قربان کر کے بچوں کے کل کی بہتری کے لیے کوشاں رہتے ہیں۔ دیگر معاشروں اور مذاہب کے مقابلے میں اگر اسلام میں استاد کے مقام کے بارے میں ذکر کیا جائے تو اسلام اساتذہ کی تکریم کا اس قدر قائل ہے کہ وہ انہیں روحانی باپ کا درجہ دیتا ہے۔ کسی بھی انسان کے والدین اس کو آسمان سے زمین پر لے کر آتے ہیں لیکن استاد اس کی روحانی اور اخلاقی تربیت کے نتیجے میں اسے زمین کی پستیوں سے اٹھا کر آسمان کی بلندیوں تک پہنچا دیتا ہے۔ طالب علم کو آسمانوں کی بلندیوں تک پہنچانے میں اساتذہ بہت نمایاں کردار ادا کرتے ہیں۔ اسی لیے اللہ کے نبی صلی اللہ علیہ وآلہ وسلم نے بے شمار جگہوں پر اساتذہ کے احترام کا حکم دیا۔

کتنے خوبصورت الفاظ ہیں یہ کسی کے؟ ایک استاد کی تعریف ان چند لفظوں میں سمیٹ دی گئی لیکن بدقسمتی سے ہمارے ہاں کچھ استاد ایسے بھی ہیں جن کی بچوں کو تربیت دوسروں سے نفرت کرنا سکھانا ہوتا ہے۔ کچھ استاد نفرت سے چند قدم آگے بڑھ کر تکفیر کرنا سکھاتے ہیں اور نتیجہ کافر کافر کھیلنے تک پھیل جاتا ہے۔ پھر اس سے آگے کیا ہوتا ہے وہ آپ سبھی جانتے ہیں۔

معاشرے کو امن پسند بنانا ہو یا فتنہ پھیلانا ہو استاد ہی اس کے ذمہ دار ہوتے ہیں استاد بچے کی درست تربیت کرے گا تو اس کا نام روشن ہو گا قوم و ملت کا سر فخر سے بلند ہو گا اور اگر استاد نفرت سکھائے گا تو شاگرد اسی کی پیروی کرتے ہوئے امن کی تباہی کا باعث بنے گا۔

ہمیں ایسے اساتذہ کا راستہ روکنا ہو گا، ان سے اظہار بیزاری کرنا ہو گا کہ یہ وقت کی اہم ضرورت ہے ورنہ نتیجہ ایک ہی ہے، کافر کافر کھیلنا طاغوت طاغوت کھیلنا یا ایک دوسرے کو کوفی کوفی کہنا۔

Views All Time
Views All Time
371
Views Today
Views Today
1
Previous
Next

جواب دیجئے

%d bloggers like this: