آنکھ کھلتے ہی چڑیوں کی چہچہاہٹ نے اسے صبح کاذب کے طلوع ہونے کی نوید سنائی۔ دل کے کسی انجان گوشے میں پنہاں کسی خیال کی یاد نے اس کے Continue Reading »