یہ لڑکیاں بہت گہری ہوتی ہیں۔اندر ہی اندر دریاؤں سا جگر لئے، پہاڑ دل میں بسائے، نہ جانے کتنے طوفانوں کو آنکھوں کے گہرے بادلوں میں یونہی بہا لے جاتی Continue Reading »