انسانوں کے بعد اب بھیڑیں بھی خودکش حملہ آور بن گئیں

Print Friendly, PDF & Email

دمشق(یو این این)انسان تو خود کش حملے کرتے ہی تھے، اب بھیڑیں بھی یہ کام کیا کریں گی۔ شام میں ایک فوجی چیک پوسٹ پر پیش آنے والے واقعے سے تو یہی لگتا ہے۔ وہاں ایک ایسی بھیڑ پکڑ لی گئی ہے جس کے جسم میں بارود بھرا گیا تھا تا کہ اسے خودکش حملے کے لئے استعمال کیا جا سکے ۔ اطلاعات کے مطابق سکیورٹی اہلکاروں نے بھیڑوں سے بھری ایک گاڑی کو روکا اور اس کی تلاشی کا عمل شروع کر دیا۔ ایک اہلکار جب گاڑی کے گرد بارودی مواد کا پتا چلانے والا سینسر لے کر گھوم رہا تھا تو اسے گڑ بڑ کا احساس ہوا۔ گاڑی کے اندر تو کچھ نا ملا البتہ ایک بھیڑ کے قریب لے جانے پر سینسر کی سیٹی بجنا شروع ہو گیا۔ پتا چلا یہ بھیڑ ہی دراصل ایک تباہ کن بم تھی، کیونکہ دہشت گردوں نے اس کے جسم میں بارودی مواد داخل کر رکھا تھا۔اس سے پہلے دمشق شہر میں بھی اسی طرح کا ایک واقعہ پیش ا? چکا ہے۔ سکیورٹی اہلکاروں نے ایک چیک پوسٹ پر ایک گائے کا پتا چلایا تھا جس کے جسم میں بھاری مقدار میں بارود چھپایا گیا تھا۔ اس بارودی مواد کو دمشق میں دھماکوں کے لئے لے جایا جا رہا تھا

Views All Time
Views All Time
440
Views Today
Views Today
2
یہ بھی پڑھئے:   عراق میں شیعہ زائرین پر حملہ، 77 افراد شہید

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: