Skip to Content

Qalamkar | قلم کار

جہالت، ظلم اور ناانصافی کے خلاف برسرپیکار

کیوبیک مسجد حملہ: مشتبہ حملہ آوروں کی شناخت ظاہر کردی گئی

by جنوری 30, 2017 ہیڈ لائن
کیوبیک مسجد حملہ: مشتبہ حملہ آوروں کی شناخت ظاہر کردی گئی
Print Friendly, PDF & Email

کینیڈا کے شہر کیوبیک میں پولیس نے مسجد میں فائرنگ کرنے والے دو مشتبہ افراد کی شناخت ظاہر کر دی ہے۔

کیوبک سٹی کورٹ کلرک ازابیل فرلینڈ نے دونوں مشتبہ حملہ آوروں کے نام الیگزینڈر بسونتے اور محمد الخادر بتائے ہیں۔

ان دونوں افراد نے مبینہ طور پر اتوار کو کیوبیک اسلامک کلچرل سینٹر پر فائرنگ کی تھی جس سے چھ افراد ہلاک اور متعدد زخمی ہوگئے تھے۔

پولیس کا کہنا ہے کہ ایک مشتبہ حملہ آور کو جائے وقوعہ سے گرفتار کیا گیا تھا جبکہ دوسرے شخص نے 911 پر کال کر کے خود کو پولیس کے حوالے کیا۔

پولیس کے مطابق دوسرے مشتبہ شخص کو پولیس نے اولینز جزیرے کی جانب جانے والے پل پر گاڑی سے گرفتار کیا گیا۔

پولیس کا کہنا ہے کہ تاحال اس حملے کا محرکات سامنے نہیں آسکے اور اس حوالے سے تفتیش کی جارہی ہے۔

کینیڈین حکام کے مطابق ان کے خیال میں اس حملے میں مزید کوئی اور شخص ملوث نہیں ہے۔

حکام کے مطابق دونوں افراد کی عمریں اندازاً 20 اور 30 سال کے درمیان ہیں۔

اتوار کو ہونے والے اس حملہ میں 50 سے زائد افراد پر فائرنگ کی گئی تھی۔

ہسپتال ذرائع کے مطابق پانچ افراد شدید زخمی ہوئے جبکہ 12 کو معمولی چوٹیں آئی تھیں۔کینیڈا

اس سے قبل کینیڈا کے وزیر اعظم جسٹن ٹُروڈو نے حملے کو دہشت گردی قرار دے کر اس پر انتہائی غم و غصے کا اظہار کیا اور اس واقع کی شدید مذمت کی تھی۔

ایک بیان میں ان کا کہنا تھا کہ ‘ہم اس مسجد میں ہونے والی دہشت گردی کے واقع کی شدید مذمت کرتے ہیں۔ حکام اس دہشت گردی کی تفتیش کر رہے ہیں لیکن یہ بہت ہی افسوس ناک واقع ہوا ہے۔ مختلف مذاہب، زبان، نسل کے لوگوں کا مل جل کر رہنا ہی ہمارے ملک کی پہچان ہے اور ہم بحیثییت کینیڈین ان اقدار کو انتہائی اہم سمجھتے ہیں۔’

ریاست کیوبیک کے پریمیئر فیلیپ کؤیلارڈ نے بھی اس واقع کو دہشت گردی قرار دیا اور صوبے کے مسلمانوں کے ساتھ ہمدری اور یکجہتی کا اظہار کیا ہے۔

بشکریہ بی بی سی اردو

Views All Time
Views All Time
340
Views Today
Views Today
1
یہ بھی پڑھئے:   یمن حملے کے دفاع میں وائٹ ہاؤس کا بیان
Previous
Next

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

%d bloggers like this: