سرزمین علم کے عاشق لوگ

Print Friendly, PDF & Email

سرزمین علم کے لوگ بھی عاشق ہیں۔ سیاہ کپڑوں میں ملبوس بزرگ عراقی نے دو محرم سے باب العلم کے بابِ قبلہ پہ شربت و قہوہ کی سبیل کا اہتمام کر رکھا ہے۔ عراقی اور ایرانی قہوے میں چینی استعمال نہیں کرتے بلکہ مصری کی ڈلیاں رکھتے ہیں۔ دو محرم تک ایرانی نجف اشرف نہیں پہنچے تھے۔ عاشق کو محبوب کی ہر پسند کا علم ہوتا ہے۔ عراقی بزرگ نے محسوس کیا کہ فی الحال پاکستانی و ہندوستانی زائر یہاں زیادہ ہیں تو اس نے چینی کا انتظام کر کے قہوے کی پیالیوں میں ملانی شروع کر دی۔

میرے استفسار پہ اس نے وجہ بتائی تو میں نے فرطِ جذبات سے اس کی انگلیاں چھو کر چوم لیں۔ انتہائی محبت سے میرے سر پہ ہاتھ رکھ کر مسکرا دیا اور بولا، پاکستانی؟ مجنون!! میں نے پُر نم آنکھوں سے کہا، ہاں بابا ہیں لیکن عراقیوں سے زیادہ نہیں۔ جانے وہ کیا سمجھا کیا نہیں بس یا ابالحسن ع کہہ کر روتے ہوئے میرے گلے لگ گیا۔

Views All Time
Views All Time
81
Views Today
Views Today
1
یہ بھی پڑھئے:   صابن ، نیل ، سفید پوشی کا بهرم اور حکومتی ریلیف (حاشیے) | فرح رضوی

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: