Oops! It appears that you have disabled your Javascript. In order for you to see this page as it is meant to appear, we ask that you please re-enable your Javascript!

میں آپ کی تمام پریشانیوں کا حل لایا ہوں

Print Friendly, PDF & Email

اکثر آپ نے دیواروں پر مختلف اقسام کے اشتہارات دیکھے ہونگے، مثلاَ کوئی کالا جادو کرنے والا لکھتا ہے کہ آپ نے پسند کی شادی کرنی ہو، محبوب کو قدموں میں لانا ہو، ساس بہو کا جھگڑا ہو، روزگار کا مسئلہ ہو یا کاروبار وغیرہ کی بندش ہو تو آپ ہم سے رابطہ کریں۔ کہیں لکھا ہوتا ہے کہ بے اولاد جوڑے اب پریشان نہ ہوں۔ اولادِ نرینہ کا حصول ممکن ہے وغیرہ وغیرہ جبکہ اکثر و بیشتر تو مردانہ مسائل کی فہرستیں دیواروں پر چھاپ دیتے ہیں۔

مذکورہ بالا مثالوں کے علاوہ بھی آپ نے مخلتف اشتہارات دیکھے ہوں گے، ان سب میں جو بات مشترک ہے وہ یہ کہ ان اشتہاروں میں ایسے مسائل کو حل کرنے کے دعوے کئے جاتے ہیں جن کا شکار اوسطََ ہر دوسرا تیسرا عام آدمی رہتا ہے۔ بھلا نوکری کس کو نہیں چاہئے ہوتی، کون سا ایسا شادی شدہ جوڑا ہوگا جو اولادِ نرینہ حاصل نہ کرنا چاہتا ہو، نوجوان لڑکوں کا مسئلہ ہی پسند کی شادی ہے۔۔۔ لہٰذا اگر ان کو کہیں سے اپنے مسائل حل ہونے کی امید نظر آتی ہے تو فوراََ اس طرف متوجہ ہوتے ہیں اور اشتہار سے نمبر اٹھا کر بلاتوقف ڈائل کرتے ہیں۔۔۔۔ مگر انہیں معلوم نہیں ہوتا کہ فون پر ان کے مسائل سننے والا اور انہیں حل کرنے کے عوض بھاری رقم کا تقاضہ کرنے والا دراصل خود اتنے مسائل میں گِھرا ہوا ہے کہ حق حلال کی روزی چھوڑ کر دھوکہ دہی کو اپنا ذریعہ معاش بنا رکھا ہے۔

یہ راز ہمیشہ ان سادہ لوح لوگوں پر تب جا کر عیاں ہوتا ہے جب وہ اپنی حلال کمائی میں سے ایک اچھی خاصی رقم اس ڈھونگی شخص کے حوالے کرچکے ہوتے ہیں اور اس کے بدلے میں انہیں سوائے ندامت کے کچھ نہیں ملتا، ایک عرصے بعد ان لوگوں پر کھُلتا ہے کہ اس شخص کے پاس ایسی کوئی طاقت نہیں تھی کہ وہ ہمارے مسائل حل کرسکے مگر اس کے پاس صرف ایک صلاحیت تھی کہ وہ عام لوگوں کے روز مرہ کے مسائل کو اس انداز میں لکھتا کہ پڑھنے والے یہ گمان کرنے لگتے کہ اگر اس نے ہمارے مسئلے کی تشخیص کی ہے تو یہ یقیناََ اس کو حل کرنے کی صلاحیت بھی رکھتا ہوگا۔مگر یہ راز کھلنے تک کافی دیر ہوچکی ہوتی ہے اور لوگ اپنا اچھا خاصہ سرمایہ لٹا چکے ہوتے ہیں۔

غالبَا آپ اس انتظار میں ہونگے کہ میں اس تحریر کے عنوان کے پیشِ نظر آپ کے مسائل کا حل بھی بتائوں گا، مگر مجھے افسوس سے کہنا پڑ رہا ہے کہ میرے پاس آپ کے کسی مسئلے کا حل نہیں، مجھے تو آپ کی توجہ کھینچنے کیلئے ایک بہترین عنوان چاہئے تھا تا کہ میں اپنا منجن بیچ سکوں۔ اصل بات یہ ہے کہ آپ اپنے مسائل اور ان کی نوعیت کو کسی دوسرے سے بہتر سمجھ سکتے ہیں اور اس کا بہترین حل بھی آپ ہی کے پاس ہوتا ہے بشرطیکہ آپ تحمل سے کام لیں اور ایسے لوگوں میں سے نہ ہوجائیں جو دھوکے باز بابوں کے چکر میں آکر اپنی اولاد تک قربان کردیتے ہیں، لہٰذا کسی کی بھی اندھی تقلید کرنے سے پہلے اس امر کی اچھی طرح تصدیق کرلیں کہ آپ کو راہ دکھانے والا خود صحیح راہ کی طرف جا رہا ہے یا اپنے ساتھ ساتھ آپ کو بھی گمراہ کرنے والا ہے۔ نوٹ: اس تحریر کو کسی لسانی تحریک سے تشبیہ دینے والا ہم میں سے نہیں۔

یہ بھی پڑھئے:   ویلنٹائین ڈے کا غیر جانبدارانہ جائزہ

Views All Time
Views All Time
239
Views Today
Views Today
1

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: