آئیے جشنِ آزادی پر کچھ ایسا کریں کے سارا سال رنگ سجا رہے

Print Friendly, PDF & Email

ماہِ اگست کا آغاز ہوچکا ہے اور ہر سال کی طرح اس سال بھی جشن آزادی کی مناسبت سے ملک بھر میں تیاریوں کا سلسلہ جاری ہے۔
روایتی انداز میں گھروں پر قومی پرچم، برقی قمقمے، ہری جھنڈیاں، سینوں پر بیجز، عمارتوں پر روشنیاں، ملی نغمے اور دیے جلانا، یہ سب سجاوٹیں جشن آزادی کی تقریبات کو دلفریب رنگ چڑھا دیتی ہیں۔ مگر یہ سب سجاوٹیں اور پر رونق خوبصورتی آزادی کے جشن کے ساتھ ساتھ ختم ہو تی جاتی ہے۔ یہاں سوال یہ پیدا ہوتا ہے کہ کیا کوئی سجاوٹ کا ایسا طریقہ بھی ہے کہ جس سے ہمارا ملک سارا سال سجا رہے اور آنے والے وقتوں میں اس کی خوبصورتی کا رنگ زائل نہ ہو؟ کیا یہ ممکن ہے کہ اپنے محبوب وطن پر ایسا رنگ چڑھایا جائے جو کبھی پھیکا نہ پڑے؟

جواب ہے ہاں!! رنگ برگ و شجر سے اس دھرتی پر ایسی خوبصورت چادر چڑھائی جا سکتی ہے کہ جس کا رنگ ہمیشہ تازہ و خوش نما رہےگا اور اسے کوئی خزاں ماند نہ کر سکے گی۔
اگر موسموں کی تبدیلی کو مدِ نظر رکھیں تو بات واضع ہے کہ اس وقت ہمارے ملک کو اگر کسی عمل کی سب سے زیادہ ضرورت ہے تو وہ ہے شجر کاری اور جنگلات کو بڑھانا۔ ماحولیاتی آلودگی، پانی کی کمی، بارشوں کا نہ ہونا، موسم کی شدت، خوراک کے مسائل اور خشک ہوتے دریا، ان سب کی ایک بڑی وجہ درختوں اور جنگلات کی کمی ہے۔

یہ بھی پڑھئے:   حسین کا غم ہے | شازیہ مفتی

1990ء کے اعدادوشمار کے مطابق پاکستان میں 3.3 فیصد جنگلات موجود تھے۔ لیکن 2015ء کے ولڈ بینک کے ترقیاتی اعدادوشماردکے مطابق پاکستان میں جنگلات 1.9 فیصد رہ گیا ہے۔ جبکہ ہمارے ہمسائے ملک بھارت میں 23.77 فیصد جنگلات موجود ہیں۔ 2015 کے ولڈ بینک کے اعدادوشمار کے مطابق پاکستان میں 362520 مربع کلومیٹر زرعی زمین موجود ہے اور جنگلات تقریباً 14720 مربع کلومیٹر پر مشتمل ہیں۔ درختوں اور جنگلات کی کمی کی وجہ سے پاکستان میں گرمی کا عرصہ اور شدت دونوں بڑھ رہے ہیں۔ جس کی وجہ سے فصلوں کی کاشت کا وقت متاثر ہو رہا ہے۔ اس کے ساتھ ساتھ انسانوں اور جانوروں کو بھی دشواری اور گرمی کا سامنا کرنا پڑھ رہا ہے۔

درخت لگانا صدقہ جاریہ ہے۔ اگر ہم اس جشنِ آزادی پر اپنے ملک کو تحفہ دینا چاہتے ہیں، قومی ہیروز اور شہداء کو خراجِ عقیدت پیش کرنا چاہتے ہیں تو سب سے بہتر عمل یہ ہے کہ ہر فرد کم از کم ایک درخت ضرور لگائے اور اسے قومی ہیرو یا شہید کے نام سےمنسوب کردے۔ اس عمل میں سماجی تنظیم Ideas 9 کا بھرپور ساتھ دیں اور اس بار جشن آزادی ایک منفرد طریقے سے منائیں۔
خدا کرے کہ میری عرضِ پاک پر اُترے
وہ فصل گُل جسے اندیشہِ زوال نہ ہو۔
پاکستان پائندہ باد

یہ بھی پڑھئے:   شجر شجرہیں تو ہیں بستیاں آباد ہر سُو
Views All Time
Views All Time
322
Views Today
Views Today
2

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: