Skip to Content

Qalamkar | قلم کار

جہالت، ظلم اور ناانصافی کے خلاف برسرپیکار

جھیلوں کی زمین | علینہ ارشد

by اکتوبر 22, 2017 بلاگ
جھیلوں کی زمین | علینہ ارشد
Print Friendly, PDF & Email

کینیڈا اپنے پانی کی وجہ سے جانا جاتا ہے اوراسے جھیلوں کی سر زمیں کہا جاتا ہے۔یہاں بہت سے دریا، جھیلیں اور تین سمندر پائے جاتے ہیں جو سیاحوں کو اپنی طرف متوجہ کرتے ہیں اور یہ دنیا کے سب سے بڑے تازہ پانی کا گھر ہے، دنیا کے تازہ پانی کا بیسواں حصہ کینیڈا میں پایا جاتا ہے۔کینیڈا دس صوبوں کی سرزمیں ہے یہاں تین ملین سے زیادہ جھیلیں ہیں ۔کیوبک ملک کا سب سے بڑا صوبہ ہے جس میں پچاس ہزاربڑی جھیلیں ہیں ۔گریٹ سلیو جھیل یہاں کی سب سے بڑی اور شمالی علاقہ کی سب سے گہری جھیل ہے اوراس کی لمبائی پانچ سو ساٹھ کلو میٹر ہے دنیا کی بڑی جھیلوں میں اس کا نواں نمبر ہے ۔ جو تقریباََ آدھے سے زیادہ سال برف سے ڈھکی رہتی ہے اور برف پگھلنے پر مچھیروں اور سیاحوں کو اپنی طرف متوجہ کرتی ہے۔یہ جھیل کئی پرندوں اور جانوروں کی نشوونما کے لئے موزوں ترین ہے
برگ جھیل برٹش کولمبیا کا عظیم اثاثہ ہے جو دریائے روبسن کے کنارے ماؤنٹ روبسن،کینیڈا کی سب سے بڑی چوٹی ہے میں واقع ہے اس جھیل کو یونیسکو نے اپنے بین الاقوامی ثقافتی ورثہ میں شمار کیا ہے۔ اسکا رنگ ہلکا آسمانی ہے اور یہ جھیل اپنی قدرتی خوبصورتی کی وجہ سے دنیا بھر میں مشہور ہے یہ گرمیوں میں بھی برف سے ڈھکی رہتی ہے
جھیل اونٹاریو شمالی امریکا کی پانچ عظیم جھیلوں میں سے ایک ہے اور یہ کینیڈا کے سب سے بڑے شہر اونٹاریو میں موجود ہے اس جھیل کی وجہ سے ہی اس شہر کا نام اونٹاریو رکھا گیا،اس کی گہرائی آٹھ سو دو فٹ ہے۔نزدیک ترین گالو، گارڈن اور ٹو رنٹو کے جزیرے موجود ہیں،تو جب شہری گرمیوں میں گرمی کی شدت سے تنگ آ جائیں تو وہ مچھلیاں پکڑنے ،جیٹ سیکنگ اور تیراکی کے لئے اس طرف کا رخ کرتے ہیں۔
نائیگرا فالز کینیڈا اور امریکا کی حدود میں پائی جاتی ہے ایک منٹ میں ۶ کیوبک فٹ کا پانی نائیگرا فالز سے بہت تیزی سے بہتا ہے۔یہ اپنی خوبصورتی اور ہائیڈرولک پاور کی وجہ سے مشہور ہے نائیگرافالز پرموجود رینبو پل کینیڈا اور امریکہ کی شہروں اونٹاریو اور نیویارک کو آپس میں ملاتا ہے اور بہت دلکش نظارا پیش کرتا ہے۔
وینی پیک جھیل کینیڈا کی جھیلوں میں چھٹے نمبر پر آتی ہے اس جھیل کو شمالی علاقہ جنگلات ، ریتلے جزیروں، چونے سے ڈھکی ہوئی چٹانوں اور چمگادڑوں سے بھری غاروں نے ڈھکا ہوا ہے۔یہ جھیل مختلف اقسام کے ماحولیاتی نظام کا گھر ہے جس کے لئے کئی جزیرے ابھی تک دریافت نہیں کئے جا سکے۔
گرے بلدے جھیل کینیڈا کی خوبصورت ترین جھیلوں میں سے ایک ہے۔گرمیوں میں یہ ہائیکنگ کے لیے مشہور ہے اور سردیوں میں اسکیٹنگ جیسی سرگرمیوں کے لئے اہمیت کی حامل ہے اس کا ہلکا فیروزی رنگ سانس ساکن کر دیتا ہے اور پہاڑوں کا پانی چھوٹے پتھروں پر گرتا ہے تو ایسا لگتا ہے جیسے یہ جھیل چل رہی ہو۔
مورین جھیل نیشنل پارک میں پائی جاتی ہے یہ دنیاکی مشہور ترین جھیلوں میں سے ایک ہے۔اسکی لمبائی اٹھارہ سو پچاسی میٹر ہے اور یہ اپنے نیلے رنگ کی وجہ سے مشہور ہے جس کو برف سے ڈھکے ہوئے پہاڑوں نے گھیر رکھا ہے۔ یہ جھیل ہائیکنگ کے لیے مشہور ہے اور بہت سے بین الاقوامی مقابلہ جات کروانے کا شرف بھی اس جھیل کو حاصل ہے۔
میلائن جھیل البرٹا میں جیسپر نیشنل پارک میں واقع ہے۔یہ جھیل اردگرد کی چوٹیوں اور تین گلیشئیرز کی وجہ سے مشہور ہے اور جیسپر سے چوالیس کلومیٹر کے فاصلے پر موجود ہے۔ اسکی لمبائی بائیس کلومیٹر اور گہرائی ستانوے کلومیٹر ہے اسکے گردونواح میں بھیڑئیے، پہاڑی بھیڑیں پائی جاتی ہیں۔
جھیل مینیٹوبا سطح سمندر سے دو سو اڑتالیس میٹر اوپر واقع ہے یہ دو سو پچیس کلومیٹر طویل پینتالیس کلومیٹر چوڑی اور سات کلومیٹر گہری ہے۔یہ جھیل مینیٹوبا کے جنوبی حصہ میں واقع ہے اسکا بنیادی بہاؤ فئیرفورڈ دریا کی جانب ہے یہ اپنے قدرتی حسن کی وجہ سے سیاحوں کی توجہ کا مرکز ہے
جھیل ابرائی شمالی امریکا کی پانچ بڑی جھیلوں میں چوتھے نمبر پر اور دنیا کی بڑی جھیلوں میں تیرویں نمبر پر ہے۔ یہ اونٹاریو کے قصبے میں واقع ہے اسکی گہرائی دو سو دس فٹ ہے اور اسے برف سے ڈھکے ہوئے پہاڑوں نے گھیر رکھا ہے۔
یہ سب جھیلیں مل کر کینیڈا کی سر زمیں کو اور بھی خوبصورت بنا دیتی ہیں اور ان سب کی وجہ سے ہی کینیڈا کو جھیلوں کی سرزمیں کہا جاتا ہے۔

Views All Time
Views All Time
428
Views Today
Views Today
1
یہ بھی پڑھئے:   پانچ فروری یومِ حقوق گلگت بلتستان
Previous
Next

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

%d bloggers like this: