ہیلوسی نیشن – علینہ ارشد

Print Friendly, PDF & Email

امی آپ نے مجھے بلایا کیا؟
نہیں بیٹا! میں نے تو نہیں بلایا۔
رافع کو کبھی کبھار گھر میں چڑیا اڑتی ہوئی نظر آتی لیکن کسی اور کو نظر نہ آتی تھی۔
احمد کو ایک چھوٹا بچہ نظر آتا اور وہ اس سے باتیں بھی کرتا لیکن کسی اور کو وہ کبھی نظر نہ آیا۔
ننھی کو ایسا لگتا ہے کہ اس کے جسم پر کوئی چیونٹی رینگ رہی ہے۔
ڈاکٹر صاحب کو اپنے کلینک میں بھینی بھینی خوشبو محسوس ہوتی۔
ریٹائرڈ میجر کو مختلف آوازیں سنائی دیتیں کہ کوئی اُن کا نام لے کر اُن کو پکار رہا ہے۔

مذکورہ بالا صُورَتِ حال میں ہیلوسی نیشن کی مختلف علامات بیان کی گئی ہیں جن کا تجربہ مریضوں کو ہوتا رہتا ہے۔
ہیلوسی نیشن کو حرفِ عام میں ہذیان کہا جاتا ہے۔ یہ ایک ایسی حِسی کیفیت ہے جس میں مریض کسی ایسی شے کو محسوس کرتا ہے جو حقیقت میں موجود ہی نہیں ہوتی۔ مثلا آوازیں سننا، کسی آدمی کو دیکھنا وغیرہ۔ اس میں مریض غیر موجود اشیاء کا حسی تاثر محسوس کرتا ہے جس کا براہِ راست ہماری حواس خمسہ سے تعلق ہوتا ہے مثلاََ مریض یہ سمجھتا ہے کہ پاس کھڑے شخص نے اسے پکارا ہے، نئی خوشبو یا بدبو آنے لگتی ہے، مریض کے جسم پر چونٹیاں رینگتی محسوس ہوتی ہیں اور مختلف عکس نظرآتے ہیں۔ پرانے زمانے میں یہ خیال کیا جاتا تھا کہ یہ بھوت پریت، دیوی دیوتاؤں، بد روحوں اور جنات کا اثر ہے اس کے علاوہ روحانیت سے تعلق رکھنے والے لوگ بھی یہ دعویٰ کرتے ہیں کہ انہوں نے مردہ لوگوں کی آوازیں سنی ہیں ان سے بات چیت کی ہے اور انہیں جنات ،آسیب وغیرہ نظر آتے ہیں۔ ان خیالات کو دماغ میں بیٹھا لینے سے ان کو واقعی ہی ویسی چیزیں سنائی اور دیکھائی دینے لگ جاتی ہیں کیونکہ انسانی دماغ اُن باتوں کی ویسی ہی تصویریں اور آوازیں بنا لیتا ہے۔
مگر یہ سب کچھ ہمارے دماغ کی پیداوار ہے؛ ان باتوں کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہے۔
شاعر لوگ ہر وقت اپنی ایک جازبیت کی کیفیت میں کھوئے رہتے ہیں تو انہیں بھی شکلیں نظر آنے لگتی ہے۔ یہ عاشقی اور جنونی کیفیت انسان کو نفسیاتی مریض بنا دیتی ہے جس میں مریض فرضی طور پر گفتگو کر رہا ہوتا ہے، باتیں سن رہا ہوتا ہے اور دیکھ رہا ہوتا ہے۔
اسکی بہت سی اقسام ہیں جن میں سے چند ایک مندرجہ ذیل ہیں۔

یہ بھی پڑھئے:   اور پھر ایک فتوٰی آیا

بصری ہیلوسی نیشن:
بصری ہیلوسی نیشن میں مریض عکس، ہیولے، تصویریں ،مختلف لوگوں اور چیزوں کی شکلیں دیکھتا ہے۔ مثلاََ ایسا لگتاہے کہ کوئی شخص پیچھے کھڑا ہے یا کسی پرندے کا اڑتے ہوئے نظر آنا وغیرہ۔

شامی ہیلو سی نیشن:
اس میں مریص کوخوشبو یا بدبو محسوس ہوتی ہے ایسا محسوس ہوتا ہے کہ کسی چیز کی بدبو آ رہی ہے یا گلاب کی خوشبو ہے وغیرہ۔

سمعی ہیلو سی نیشن:
مریض کو مختلف مدھم، دھیمی اور اونچی آوازیں سنائی دیتی ہیں جن کا حقیقت سے کوئی تعلق نہیں ہوتا بعض اوقات بار بار دہرائی جانے والی آوازیں سنائی دیتی ہیں مثلا کسی دوست کے پکارنے کی آواز یا گھر میں والدہ کی آواز وغیرہ

ذائقے کی ہیلوسی نیشن:
مریض مختلف قسم کے ترش،پھیکے ، میٹھے اور نمکین ذائقے محسوس کرتا ہے۔

لمسی ہیلوسی نیشن:
اس میں مریض کو ایسا لگتا ہے کہ جیسے اس کے جسم پر کوئی کیڑا رینگ رہا ہے یا کوئی مکھی بیٹھی ہے اور اس کے اندرونی جسمانی اعضا حرکت کر رہے ہیں۔

وقتی ہیلو سینیشن:
بعض اوقات کسی گہرے صدمے مثلاََ کسی پیارے کی وفات ہو جانے سے، طلاق، محبت یا کسی سانحے کی وجہ سے وقتی طور پر مریض مرے ہوئی شخص کی آوازیں سنتا ہے اور اس کو دیکھتا ہے لیکن صدمے کے اثرات جیسیہی کم ہوتے ہیں انسان اپنی اصلی حالت میں لوٹ آتا ہے۔ لِہٰذا اس قسم کی ہیلو سی نیشن اتنا زیادہ نقصان دہ نہیں ہوتی لیکن وقتی طور پر اس کے کافی اثرات ہوتے ہیں۔

ہیلوسی نیشن کے اسباب میں بائیو کیمیکل تبدیلیاں، نفسیاتی عوامل اور سماجی عوامل شامل ہیں جو کہ درج ?یل ہیں:
مختلف دماغی امراض مثلا شیزوفرینیا، ڈیمنٹیا وغیرہ۔
شراب، ہیروئین، نکوٹین،دوسری منشیات اور نشہ آور ادویات کا بہت زیادہ استعمال۔
نیند کی کمی یا مسلسل راتوں سے نہ سونا۔
مختلف دماغی اور جسمانی بیماریوں کی ادویات کے اثرات۔
بچوں اور بڑوں میں بخار۔
آدھے سر کا درد۔
سماج سے الگ تھلگ رہنا۔
بصری اور سمعی بیماریاں۔

یہ بھی پڑھئے:   دو آنکھیں کتنا روئیں؟ - عادل باجوہ

درج ذیل سفارشات ہیلوسی نیشن کے اثرات کو کم کرنے اور ختم کرنے کے لیے مفید ثابت ہوں گی:
اگر آپ نشہ کرتے ہیں تو نشہ کی مقدار کو کم کر دیں۔
ذہنی دباؤ اور تشویش کو کنٹرول میں رکھیں اور مکمل طور پر پرسکون رہیں۔
اگر آپ کو کوئی جسمانی بیماری ہے تو فورا اپنے معالج کو دیکھائیں۔
اپنے آپ کو پرسکون رکھنے کے لیے موسیقی سن لیں، کوئی چاکلیٹ کھا لیں، اپنی پسندیدہ فلم دیکھ لیں یا کوئی اور مصروفیت والا کام کر لیں۔
اپنی صورتحال کو اپنے کسی گھر کے فرد یا دوست کو بتائیں۔
اگر آپ کسی بیماری کی ادویات لے رہے ہیں تو اپنے معالج سے رابطہ کریں۔
صحت مند غذا کھائیں اور باقاعدگی سے ورزش کریں۔
اپنے دوست، گھر والوں سے خوش کلامی کریں اور اپنے آپ کو تسلی دیں.
آنے والی آوازوں پر غور کریں کہ کہاں سے آرہی ہیں اور کیا بتا رہی ہیں اور ان آوازوں کے بارے میں کسی دوست سے بات چیت کریں۔
اگر ہیلوسی نیشن کی علامات مزید شدت اختیار کر جائیں تو فوری طور پر کسی ماہر نفسیات یا سائیکیٹریسٹ کو دیکھایا جائے۔

Views All Time
Views All Time
653
Views Today
Views Today
1

جواب دیں

آپ کا ای میل ایڈریس شائع نہیں کیا جائے گا۔ ضروری خانوں کو * سے نشان زد کیا گیا ہے

%d bloggers like this: