Skip to Content

Qalamkar | قلم کار

جہالت، ظلم اور ناانصافی کے خلاف برسرپیکار

خلافت اسلامیہ کا خاتمہ

by دسمبر 16, 2016 بلاگ
خلافت اسلامیہ کا خاتمہ
Print Friendly, PDF & Email

داعش کو شکست ہو چکی ہے ۔ بڑی تعداد میں باغی عام شامی شہریوں میں شامل ہو کر بھاگ رہے ہیں ۔۔۔ برقعے اور داڑھی کا رواج ایک دن میں ختم ۔۔۔
داعش کے ظلم اور جبر سے تنگ حلب کے شہری جشن مناتے سڑکوں پر آ گئے۔۔۔
شکرانے کے نوافل ادا ہوئے۔۔
تکفیری لوگوں کی لگتا ہے روحانی امی فوت ہو گئی ہے ۔ ہر طرف پرانا وہابی ایجنڈا کا رنڈی رونا بپا ہے۔۔۔
اسد ظالم ٹھہرا ۔۔ ابو بکر بغدادی ؤ ہمنوا مظلوم۔۔۔
جس نگری میں عقل وشعور گھنگھروباندھ لیں وہاں نفس بھی ناچتا ہے اور ایمان بھی ناچتا ہے اور انسانیت بھی ناچتی ہے —
جن کو حلب کی فتح ہضم نہیں ہو پا رہی ۔ ان کو ہر طرف اسد کے ظلم نظر آ رہے ہیں۔داعشی لوگوں کو زندہ جلائیں ۔ گلے کاٹیں ۔ عورتوں کو لونڈی بنا کر پانچ پانچ سو ڈالر میں بیچ دیں۔
سب جائز اور لمبی خاموشی۔۔۔۔
آل سعود کے جبر کے خلاف بولنے والے شیخ نمر کا سر قلم ہوا ۔۔۔ وہابی بولے کہ سعودیہ آزاد ملک ہے جو بھی اس کے قانون کے خلاف کرے گا اس کو سزا ملنی چاہئیے ۔۔۔۔ آج بشار الاسد اپنے ملک کے باغیوں کے خلاف لڑے تو ظلم ؟؟؟؟
یا منافقت تیرا ہی آسرا۔۔۔۔
اپنا اپنا ظالم ۔۔ اپنا اپنا مظلوم
حد تو یہ ہو گئی ہے کہ اب دعا بھی وہابی ۔ سنی اور شیعہ ہو گئی ہے۔۔
یا اللّه ۔۔ برما اور شام کے مسلمانوں کی مدد فرما ۔۔ وہابی ملاں
یا اللّه ۔۔ یمن اور فلسطین کے مسلمانوں کی مدد فرما ۔۔ شیعہ عالم
جو لوگ اسد کو شیعہ سمجھتے ہیں ۔ وہ بالکل بھی نہیں جانتے اور جو دوست اس کو سنی سمجھتے ہیں وہ بھی غلط ہیں۔
اسد ایک نیشنالسٹ عرب ہے۔
شامی فوج کی بڑی تعداد سنی عقیدہ کے جوان ہیں جس میں کرسچین بھی شامل ہیں ۔ ان کے ساتھ حسن نصر اللّه کی حزب اللّه اتحادی کے طور پر شامل ہے ۔ ساتھ میں ایرانی کمانڈو جنرل سلیمانی کا دستہ بھی شامل ہے۔
داعش حلب شہر میں النصرہ فرنٹ کے ساتھ مل کر قبضہ رکھتی تھی النصره فرنٹ کی تمام ٹریننگ ترکی میں کی گئی اور پوری دنیا سے بھگوڑے جاہل اکھٹے کیے گئے۔
بڑی تعداد میں افغانی طالبان اور سستے جہادی اکھٹے کئے گئے۔
پیسےآل سعود نے دئیے تا کہ شام میں جا کر بشار الاسد کی حکومت گرا ئی جائے ۔ سعودیہ کو ایران کے خلاف اسٹریٹجک ڈیپتھ کی ضرورت تھی جیسے ضیاء الحق نے ریال اور ڈالر سے جعلی جہاد سجایا تھا۔
طیب اردگان کا بیٹا بلال اردگان پانچ سال تک داعش سے تیل خرید کر یوروپ بیچتا رہا۔ سو سے زیادہ آئل ٹینکر روز رات کو شام سے ترکی سمگل کئے جاتے تھے ۔ اسی کرپشن کا الزام طیب اردگان کے سر ہے۔امریکا کا اسلحہ بک رہا تھا اور یو رپ کو عراق شام سے سستا تیل مل رہاتھا۔اسرائیل کا بارڈر شام سے محفوظ تھا اور سعودیہ کے بادشاہ کی جان ایرانی خطرے سےمحفوظ تھی۔سب اچھا چل رہا تھا کہ روس نے بھی اپنا حصہ وصول کرنے کا فیصلہ کیا۔
ایران نے پاکستان سے گیس پائپ لائن پروجیکٹ پر مایوس ہو کر نیا منصوبہ بنایا۔
عراق ایران شام تیل لائن بچائی جائے گی جو ہزاروں میل لمبی ہو گی اور شام کی بندرگاہ تک رسائی دی جائے گی۔مفادات اور تیل کی لڑائی ہے جس کو سنی شیعہ تنازعہ بنا کر پیش کیا جا رہاہے۔عرب سب سے پہلے عرب ہوتا ہے بعد میں سنی شیعہ بنتاہے۔
ہم پہلے وہابی ۔ سنی اور شیعہ ہوتے ہیں بعد میں کہیں تھوڑے سے پاکستانی بنتےہیں۔
بادشاہ سلمان جتنا سنی ہے اتنا ہی اسد بھی شیعہ ہے ۔ صوفی سنی اور وہابی کا فرق آپ سب جانتے ہوں گے۔
آل سعود بھی اس فرق کو بخوبی جانتے ہیں اسی لیے شام کی جنگ کو سنی شیعہ لڑائی بنا کر پیش کیا جا رہا ہے اور پوری دنیا کے سنی مسلمانوں کی ہمدردیاں سمیٹی جا سکیں۔
اس پروپیگنڈا پر کروڑوں ریال خرچ کئے جا رہے ہیں ورنہ وہابی نظریہ کو رسول اللهﷺ اور ان کی آل اولاد سے جتنی عقیدت ہے آپ جانتے ہوں گے۔
آل سعود کون سا جیب سے خرچ کرتے ہیں ۔۔۔۔ سالانہ پچاس ارب ڈولر حج اور عمرہ سے کماتے ہیں اور موج کر رہے ہیں۔ شہزادوں کی عیاشی سے جو پیسہ بچتا ہے وہ وہابی عقیدے کے مدرسوں کو خیرات کیا جاتا ہے تا کہ بادشاہت زندہ رکھی جا سکے۔وہابی نظریہ کا فروغ ہی ان کی بقا ہے ۔۔
عقیدہ اور حب الوطنی ہی ایسے انجکشن ہوتے ہیں جو بادشاہ عام لوگوں کو لگا کر جنگیں لڑا کرتے ہیں۔
صرف پاکستان میں اپنے ارد گرد دیکھیں آپ کی گلی محلے میں نئی مساجد کتنی بنیں ؟اور آپ کے کتنے رشتہ دار پچھلے تیس چالیس سال میں بریلوی سے وہابی ہو گئے؟
ہاں ۔۔۔ آرٹیکل کے عنوان پر دکھی نہ ہوں کہ خلافت اسلامیہ فوت ہو گئی۔یہ بھی ملا عمر والی افغانی خلافت تھی جو صرف پانچ سال بھی نہ ٹھہر سکی۔
یہ اللّه کی زمین اور اللّه کا نظام کے جعلی نعرے پر ریت کی دیوار تھی اسی لیے جب اللّه کا جعلی خلیفہ حلب سے بھاگ رہا تھا اس وقت اللّه دیکھ رہا تھا۔
شامی فوج اور حزب اللّه کو کامیاب ضرب عضب پر دنیا بھر کے امن پسندوں کاسرخ سلام۔۔۔
جنرل سلیمانی اور ایرانی جان نثاروں کو لال سلام
انسانیت سے پیار کرنے والوں کو دہشت گردوں سے نجات پر امن کا پیغام۔۔۔
بشار الاسد فرشتہ نہیں مگر ظالم آل سعود سے لاکھ درجے بہتر ہے ۔۔۔ وہ خود کو عرب کہتا ہے۔وہ عقیدے کا چورن نہیں بیچتا ۔۔۔۔۔
وہ اللّه کے گھر کے پیسے سے یمنی قوم کا قتل نہیں کر رہا۔اسد شیر کو کہتے ہیں وہ حلب کی لڑائی میں ایک عام فوجی کی حثیت سے شامل رہا۔دھرتی ماں کی حفاظت کرنے والے ہر حریت پسند کو میرا لال سلام۔
مبروک بشارالاسد
میری منزلوں کو خبر کرو
مجھے راستوں نے تھکا دیا

Views All Time
Views All Time
2335
Views Today
Views Today
1
یہ بھی پڑھئے:   جو بوئیں گے وہی کاٹیں گے
Previous
Next

Leave a Reply

Your email address will not be published. Required fields are marked *

*

%d bloggers like this: